گولین گول پن بجلی گھر کی ٹینکی سے سیلابی  ملبہ نکالنے کا م بند

چترال (زیل نمائندہ)  واپڈا نے گولین کے مقام پر 108میگاواٹ پیدواری گنجائش کے حامل پن بجلی گھر کے پاؤر چینل کی بحالی پر کام بند کردیا جبکہ گولین روڈ اور دو پلوں کی بحالی کا کام بھی کھٹائی میں پڑگیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جمعرات کے روز سے بجلی گھر کے پاؤر چینل کے شروع میں ٹینکی میں سے سیلاب کا ملبہ نکالنے کا کام بند کرکے مشینری ایک طرف پارک کردی گئی ہے جسے واپڈا حکام کی طرف سے کام بند کرنے کا حکم ملا تھا۔ گولین روڈ اور پلوں کی بحالی بھی واپڈا کی ذمہ داری ہے جوکہ پاؤر پراجیکٹ کا حصہ ہیں لیکن اب تک صرف پل نمبر 1کی بحالی ہوسکی ہے جبکہ پل نمبر 2کی جگہ عارضی پل بنا کر ٹریفک کو بحال کیا گیا ہے لیکن گولین کے گاؤں میں واقع پل نمبر 3پر کام کا آغاز ابھی تک نہ ہونے کی وجہ سے موٹر گاڑیوں کی آمدورفت بحال نہ ہوسکی جس سے گولین کے 400گھرانے انتہائی مشکل اور ذہنی کرب میں مبتلا ہیں جبکہ بجلی گھر کے ان ٹیک پوائنٹ تک رسائی نہ ہونے سے ہیوی مشینریوں کی موبلائزیشن بھی ممکن نہیں ہے۔ واپڈا کے اندرونی ذرائع کا کہنا ہے کہ کام کی بندش اعلیٰ حکام کی طرف سے پاؤر چینل کی ٹینکی، سڑک اور پل سمیت سیلاب برد انفراسٹرکچر وں کی بحالی کے کام کی منظوری ابھی تک نہیں آئی ہے۔ واپڈا کی طرف سے کام کی بندش پر کوہ یونین کونسل سمیت اپر چترال میں بجلی کے صارفین میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی ہے کیونکہ نیشنل گرڈ سے ملنے والی بجلی کی وولٹیج انتہائی کم ہونے پر وہ ریفریجریٹر اور پنکھے کی سہولیات استعمال کرنے سے بھی محروم ہیں۔ دریں اثناء ڈپٹی کمشنرلوئر چترال نوید احمد کے مطابق بجلی گھر کو 14اگست تک چالو کیا جائے گا جس کی یقین دہانی پراجیکٹ ڈائریکٹر نے انہیں کرادی ہے۔ جب ان کی توجہ جمعرات کے روز کام کی بندش کی طرف دلائی گئی توانہوں نے اپنی لاعلمی کا اظہار کیا۔

زیل نیوز میں شائع مضامین اور کمنٹس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں
118730cookie-checkگولین گول پن بجلی گھر کی ٹینکی سے سیلابی  ملبہ نکالنے کا م بند

کالم نگار/رپورٹر : ظہیر الدین

Share This