Supreme Court Dam Initiative

محکمہ مواصلات نے مرمت و بحالی فنڈز سے مختلف منصوبوں میں کام کا آغاز کردیا

چترال(زیل نمائندہ) محکمہ کمیونیکیشن اینڈ ورکس نے اپنے سالانہ M&R فنڈ کا پہلی بار ٹنڈر کرکے اس سے محتلف مرمتی کام کاآغاز کردیا۔ ایک کروڑ ستر لاکھ روپے کے فنڈ سے شیاقو ٹیک، دنین روڈ، آفیسر میس روڈ، گرم چشمہ روڈ، بونی روڈ وغیرہ کی  مرمت اور سڑک کے کنارے حفاطتی دیواروں کا کام  بھی جاری ہے۔ گرم چشمہ روڈ پر انگار غون کے قریب سڑک دریا کی جانب کھسک گئی تھی جو نہایت خطرناک تھا وہاں باقاعدہ دریا کے کنارے حفاظتی دیوارتعمیر کی جارہی ہے تاکہ مزید گرنے سے روکا جاسکے۔ اسی طرح چترال ٹاؤن کے محتلف علاقوں میں سڑک کے کنارے نالے اور حفاظتی دیوار بنائے گیے تاکہ سڑک پانی کی وجہ سے خراب نہ ہو۔اسی طرح برنس ک قریب جو پہاڑ وں سے پانی سڑک پر بہتا تھا اس کی وجہ سے وہ جگہ کافی خراب ہوئی تھی اس جگہ بھی برساتی نالے کی جانب حفاظتی دیوار تعمیر ہورہی ہے۔برنس میں جو کنکریٹ کا حفاظتی دیوار تعمیر ہورہا ہے اس پر علاقے کے لوگوں نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ ٹھیکدار ٹینڈر کے وقت تو مکسر مشین ظاہر کرتا ہے مگر عملی طور پر اکثر مکسر مشین سے سیمنٹ کا مسالہ تیار نہیں کرتی جس سے معیارخراب ہوتا ہے کیونکہ کوئی بھی سرکاری کام  میں سیمنٹ کا کام بغیر مکسر مشین کی اجازت نہیں ہے مگر یہ ٹھیکدار پیسہ بچانے کے لیے مکسر مشین کے بجائے  ہاتھوں سے سمینٹ اور بجری مکس کرتاہے جو غیر معیاری ہوتا ہے۔ ایک ٹھیکدار نے محکمے کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لیے ایک خراب مکسر مشین لاکر کھڑی کی تھی مگر وہ کام ہی نہیں کررہی ہے۔ اسی طرح پرئیت روڈ پر بھی حفاظتی دیوار میں کوئی مکسرMixer مشین استعمال نہیں ہوتی۔

ہمارے نمائندے نے  یہ حلاف ورزی محکمے کے ایگزیکٹیو انجنیر کے نوٹس میں لایا جنہوں نے یقین دہائی کرائی وہ ایسے ٹھیکداروں سے کام بند کروائے گا جو بغیر مکس مشین کے سیمنٹ کا کام کرتے ہیں۔محکمہ سی اینڈ ڈبلیو نے پرئیت پُل کی مرمت کا کام بھی کیا جس میں لکڑی خراب ہوئی تھی اور لوگوں کو آنے جانے میں مشکلات کا سامنا کرنا تھا۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ محکمہ مواصلات نے تیس سال بعد اپنی مرمت کا فنڈ واپس خزانہ میں جمع کرنے کی بجائے اس سے مرمت کا کام کروایا جو قابل تحسین ہے تاہم عوام یہ بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ چترال میں جتنے بھی ادارے تعمیراتی کا مرمت کا کام کرتے ہیں ان کا متعلقہ ذمہ اداروں سے معائنہ ضرور کروایا جائے تاکہ کام کا معیار برقرار رہے۔

زیل نیوز میں شائع مضامین اور کمنٹس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں
117880cookie-checkمحکمہ مواصلات نے مرمت و بحالی فنڈز سے مختلف منصوبوں میں کام کا آغاز کردیا

کالم نگار/رپورٹر : گل حماد فاروقی

Share This