چترال میں  دو کروڑ سترہ لاکھ روپے کی پرمٹ پر کشمیر مارخور کاشکار

چترال(زیل نمائندہ) امریکی شہری Joe Lawrence Walraven نے ایک لاکھ چالیس ہزار امریکی ڈالر(جس کی مالیت پاکستانی روپے  میں دو کروڑسترہ لاکھ) بنتے ہیں کی پرمٹ پر توشی کے مقام میں مارخور کا شکار کیا۔شکار کیے گئے مارخو رکے سینگ کی لمبائی پچاس انچ بتائی جاتی ہے۔ ڈویژنل فارسٹ آفیسر جنگلی حیات  چترال محمد ادریس کے مطابق  مارخور کا شکار یعنی Hunting   Trophy کے  لیے اقاعدہ بولی لگائی جاتی ہے اور کامیاب بولی دہندہ کو  شکار کا لائسنس مل جاتا ہے۔ ان کے مطابق اس رقم میں سے اسی فیصد  مقامی لوگوں کو جب کہ بیس  فی صد سرکاری خزانے میں جمع ہوتی ہے۔

ہمارے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے  شہزادہ امیر حسنات الدین المعروف شہزادہ گل  جنرل سیکرٹری  البرہان ویلیج کنزرویشن کمیٹی توشی نے بتایا کہ فی الحال ہمارے صوبے میں مارخور کے شکارکے چار لائسنس سالانہ مل جاتے ہیں جن میں سے ایک لائسنس کوہستان کو مل جاتا ہے اور تین لائسنس چترال کے حصے میں آتے ہیں۔ انہوں نے مزید  کہا کہ اس سے پہلے ایک مارخور کے شکار کے لیے  ایک غیر ملکی شکاری نے ایک لاکھ پچاس ہزار امریکی ڈالر جمع کیے تھے۔ مارخور کے شکار سے ملنے والی رقم سے اس علاقے میں کافی ترقیاتی منصوبے مکمل کئے جاتے ہیں اور علاقے کے ترقی میں  اس کی کلیدی کردار ہے۔

(ads2)

لاہور  سے آئے ہوئے یونیورسٹی کے پروفیسر  ظفر اقبال سندھو کا کہنا ہے کہ مارخور اس علاقے کی ترقی میں بڑی کلیدی کردار ادا کرتا ہے اور ہمیں چاہئیے  کہ ان مارخوروں کے تحفظ کے لیے  اپنے  حصے کا کردار ادا کریں۔اور ہمیں چاہئیے  کہ غیر قانونی شکار کی  حوصلہ شکنی کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ مارخور ہمارا قومی جانور ہے اور ان کو دیکھنے کے لیے  کثیر تعداد میں ملکی اور غیر ملکی سیاح چترال آتے ہیں جس سے اس علاقے کی معیشت پر اچھے اثرات  مرتب ہوتے ہیں  مگراسی مارخور کا جب قانونی طور پر شکار کیا جاتا ہے تو ہنٹنگ ٹرافی میں سے ملنے والی رقم میں بھی اسی فی صد مقامی لوگوں کو دی جاتی ہے۔

واضح رہے ماضی میں مارخور کی اتنی اہمیت نہیں تھی مگر جب سے ہنٹنگ ٹرافی متعارف کرایا گیا ہے اس وقت سے لیکر آج تک نہ صرف ماخور کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے بلکہ اس کی اہمیت بھی بڑھ گئی اور ایک مارخور سے دو کروڑ روپے سے زیادہ مالیت مل جاتی ہے جو ویلیج کنزرویشن کمیونیٹی کے ساتھ سرکار کو فائدہ پہنچتا ہے۔

زیل نیوز میں شائع مضامین اور کمنٹس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں
108230cookie-checkچترال میں  دو کروڑ سترہ لاکھ روپے کی پرمٹ پر کشمیر مارخور کاشکار

کالم نگار/رپورٹر : گل حماد فاروقی

Share This