سیاحت

چترال میں سیاحت کو فروغ دینے کے لیے ہم یہ مسقتل سلسلہ شروغ کر رہے ہیں۔ چترال میں سیاحت کو فروغ دینے کے لیے اپنے تخلیقات ہمیں ارسال کریں ای میل ایڈرس ہے۔ zealnews.tv@gmail.com آپ ہمیں واٹس ایپ بھی کر سکتے ہیں

0302-2999325 or 0345-0990083

امسال عید کے چھٹیوں اور بعد میں لاکھوں سیاح چترال آئے: رپورٹ

چترال(زیل نمائندہ) برف پوش پہاڑوں میں گھر ے ہوئے، مخصوص ثقافت کے حامل، رنگین لباس میں ملبوس کیلاش  ثقافت کودیکھنے کیلئے امسال لاکھوں کی تعداد میں سیاحوں نے وادی کا رح کیا۔  ایک محتاط اندازے کے مطابق تقریبا چار لاکھ گاڑیاں چترال میں داحل ہوئے جن میں زیادہ تر وادی کیلاش چلے گئے۔ اس کے علاوہ سیاحوں نے گرم چشمہ، ...

مزید پڑھئے

کالاش قبیلے کا مشہور تہوار چیلم جوشٹ اختتام پذیر

بمبوریت (گل حماد فاروقی) گذشتہ پندرہ سالوں سے انتہائی سخت سیکیورٹی میں منایا جانے والا دنیا کی قدیم ترین ثقافت کے حامل علاقے کے باشندوں کا مقامی تہوار اس سال انتہائی جوش اور جذبے سے منایا گیا۔ موجودہ حکومت کے سیاحتی اقدامات کے باعث کثیر تعداد میں غیر ملکی سیاحوں نے بھی کالاش قبیلے کے مذہبی تہوار چیلم جوشٹ میں ...

مزید پڑھئے

میرا گاوں بونی

رقبے کے لحاظ سے  چترال صوبہ خبیر پختونخواہ کا سب سے بڑا ضلع ہے جو دو تحصیلوں “تحصیل چترال “(لوئر چترال) اور “تحصیل مستوج ”  ( اپر چترال)  پر مشتمل ہے ۔ بونی تحصیل مستوج کا صدر مقام ہے جو  چترال خاص سے ۷۵ کلومیٹر کے فاصلے پر  چترال شندور روڈ کے دائیں طرف واقع  ہے۔ بونی تقریبا  ۱۶۰۰ گھرانےاور ...

مزید پڑھئے

آئیں دروش کی سیر کریں

آپ بے شک جنت نظیر وادیوں، طلسماتی حسن اوردلفریب مناظر سے بھرپور مملکت خداداد پاکستان کے کئی بلند وبالا پہاڑوں کی فلک بوس چوٹیوں کو سر کرکے ان کی بلندی اور عظمت سے ہم کلام ہوئے ہوں گے۔ کئی چمکتے صحراﺅں کا نظارہ کیا ہوگا،کئی لہلہاتے کھیتوں میں بوجھل دل اور تھکے، ٹوٹے، ہارے بدن کو سہلایا اور آرام بخشا ...

مزید پڑھئے

پریت نگرتریچ میر

زمین نے پہاڑ کو میر کا نام بخشا ہے یا پھر پہاڑ کے مرہون جنگل، پہاڑیاں، دریا، چشمے، آبشار اور کوہسار تریچ بنے ہیں، ایک بحث ہے ۔ البتہ اتنا ضرور ہے کہ “میر” اور تریچ دونوں موجود ہیں ۔ اور بے مثال موجود ہیں ۔اس وجود کو نیلے ہو کہ ابریں ہو، آسمان نے مانا ہے ۔ دور ہو ...

مزید پڑھئے

شاہ جنالی اور سیاحت

گزرے برسوں کی بات ہے جب گاؤں میں درختوں کے سائے دوہرے ہو جاتے اور دور کہیں بچے “انگریز، انگریز” پکارتے تو ہم ایسے بھاگتے کہ چپل پاؤں سے نکل کر دور جا گرتے۔ گورے بڈھے بڈھیاں، جواں سال، نیم برہنہ لڑکیاں، کسرتی جسم والے سفید فام مرد ہاتھوں میں شفاف منرل واٹر کی بوتل (جسے ہم دارو سمجھ کر ...

مزید پڑھئے