کالم

وسطی ایشیاء اور ہندوستان کا تجارتی راستہ چترال

قدیم زمانے سےوسط ایشیاء اور ہندوستان کے درمیان تجارت جن راستوں سے ہوتی تھی ان میں سے ایک مصروف راستہ یارقند چترال پشاور کا تھا۔ یہ دیگر راستوں کے مقابلے میں آسان اور مختصر لیکن چترال کی جنوب میں باشگلی (موجودہ نورستانی) لوگوں کی لوٹ مار کے سبب کسی قدر غیر محفوظ تھا۔ 1895 میں اس علاقے پر انگریزوں نے ...

مزید پڑھئے

تقلید نہیں تحقیق

شاعر ادیب قلم کار معاشرے   کو مقلدانہ روِش پر لگا کر بگاڑ بھی سکتے ہیں اور اپنی تحقیقی مقالوں تحریروں ٹھوس علمی بحث مباحثوں  اور اپنے فِکر سے اِسےنکھار بھی سکتے ہیں۔اس سلسلے میں تاریخ کے اوراق یہ گواہی دیتے ہیں کہ جس قوم نے تقلید کا راستہ چُنا یا جِن کو مقلدی کا تاج سر پہ سجا ہوا ملا ...

مزید پڑھئے

ایک ناقابل یقین واقعہ

آج کے اس واقعے کو اگر میں زندگی کا تلخ ترین تجربہ کہوں تو بے جا نہ ہوگا ہوا یوں کہ صبح سات بجے چترال کے لئے میں گھر سے نکلا میرے پاس ساڑھے چار لاکھ نقد روپے تھے جو اتوار کی چھٹی کی وجہ سے بنک میں جمع نہیں کرا سکے تھے یہ رقم ہفتے والے دن میں گھر ...

مزید پڑھئے

اے عزیزانِ شہر!

ٹھٹھہ بہت ہو چکا، حماقتیں بہت ہو چکیں. اب لازم ہے کہ اس عطائے خداوندی یعنی عقل سلیم کو کام میں لاکر، خرد کا پاس رکھتے ہوئے ، سازشی نظریات کو پسِ پشت ڈال کر اپنے اور اپنے متعلقین کی زندگیوں کے ساتھ مزید کھلواڑ نہ کیا جائے. افواہوں کی کثرت حقیقت کو مبہم بنا دیتی ہے. یوں اچھے بھلے ...

مزید پڑھئے

ابابیل کے ساتھ سفر

وادی پرسان! خوابوں جیسی حقیقت زمین سیم و تھو ر کا شکار، لوگ مجسم تبسم، سطح سمندر سے 10 ہزار فٹ کی بلندی پر واقع پہاڑی علاقہ، خیالات کی بلندی علاقے کی بلندی سے کہیں زیادہ۔ مشکل ترین علاقہ، آسان ترین مسکان بھرے لوگ۔وسائل سے مکمل محروم بستی، مہمان نواز اتنے کہ منہ کا نوالہ بھی مہمان کو کھلانے کی ...

مزید پڑھئے

کوویڈ ۱۹ کی وبا میں نجی تعلیمی ادرے اور اساتذہ

جن کے کردار سے آتی ہو صداقت کی مہک ان کی تدریس سے پتھر بھی پگھل سکتے ہیں کسی بھی معاشرے میں تبدیلی لانےکےلیےدوسرے عوامل کے علاوہ تعلیم و تربیت بنیادی کردار ادا کرتی ہے۔ایسی تعلیم جس کے ذریعے انسانی طرز زندگی کے اندر مثبت تبدیلی آئے اور اس تبدیلی کی جھلک معاشرے میں بھی دکھائی دے بہترین تعلیم و ...

مزید پڑھئے

کرکٹ ہیرو سے وزیر اعظم بننے تک

افراط و تفریط ہمارے قومی مزاج کا حصہ ہے۔ اپنے پسندیدہ لیڈر کے اوصاف کو ہم بڑھا چڑھا کر پیش کرتے ہیں اور نا پسندیدہ شخص میں ہمیں کوئی خوبی نظر نہیں آتی بلکہ اس کے نقائص اس قدر زیادہ لگتے ہیں کہ اسے ہمارے لیے برداشت کرنا مشکل ہو جاتا ہے۔ یہ افراط و تفریط اور یہ عدم توازن ...

مزید پڑھئے

مجبوری کی لکیر پڑھئیے!

وائس آف امریکہ کی ایک رپورٹ کے مطابق ‘دی نیو یارک ٹائمز’ میں کارا بکلی نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ بہت سے سفید پوش امریکی زندگی میں پہلی مرتبہ بے روزگاری الاؤنس اور خیراتی رقوم کے لیے درخواست کرنے لگے ہیں۔ وہ لکھتی ہیں کہ امریکی ریاست ٹیکسس کے شہر ڈیلس میں ایک فوڈ بنک کے باہر کاروں ...

مزید پڑھئے

کیا AKDN کے پاس آلہ دین کا چراغ ہے؟

موجودہ دور میں اگر کسی کے پاس ایک سمارٹ فون، دو چار جملے جوڑنے کے ہنر کیساتھ ساتھ فتنہ انگیز دماغ ہو تو وہ سوشل میڈیا کے زریعے پیالی میں اچھا خاصہ طوفان اٹھا سکتا ہے۔ گزشتہ چند دنوں سے بروغل کا ایک صاحب اپنے علاقے کے مسائل کا بین کرتے ہوئے سوشل میڈیا کا آسمان سر پر اٹھا رکھا ...

مزید پڑھئے

ڈی سی لوئر  چترال اور ایم پی اے چترال کا تنازعہ کیسے حل ہوا؟

سول سروس اور سول سرونٹ یہ وہ الفاظ ہیں جو ہر خاص وعام کی زبان پر رہتے ہیں۔  ان تمام کے لغوی معنی خدمت اور خدمت گار کے ہوتے ہیں۔ عوام کی خدمت کے لیے جو ادارے قائم کیے گئے ان کی افادیت کا عوام کو صحیح طور پر علم ہی نہیں کیونکہ عوامی خدمات کی ذمے داری جن سرکاری ...

مزید پڑھئے