روزانہ ارکائیوز

انتظامیہ دریائے چترال میں مچھلیوں کی نسل کشی کا نوٹس لے ۔ حفیظ اللہ امین

بونی(نمائندہ زیل)  بونی کے مقام پر کوڑا کرکٹ ، اور مرغیوں کے فضلات دریاء چترال میں پھیکنا روز کا معمول بن چکا ہے ۔ گزشتہ دنوں ظلم کی انتہا یہ ہوئی ہے کہ غالباً ہسپتال کی زائد المیعاد ادویات یا کوئی اور چیز دریاء میں پھینکی گئی جس کی وجہ سے کافی تعداد میں مچھلیاں مرچکی ہیں ۔یہ باتیں معروف ...

مزید پڑھئے